فیس بک سے دوری تین دن بھی صحیح۔۔۔لیکن عشق کے تقاضے تو کچھ اور ہیں!

فرحان ظفر
اس ٹرکش نوجوان کا سوچ کر میری آنکھیں عقیدت سے جھک جاتی ہیں جس نے فیس بک کو ہیک کرنے کی کوشش کی!

انٹر نیشنل اسلامی یونیورسٹی کے اس طلباء گروپ کاخیال میرےذہن کوان کی محبت سے بھر دیتاہے جنہوں نے ایسا سوفٹ وئیر تخلیق کر کے ای میلز کے ذریعے پھیلایا جو ایک کلک پر فیس بک کے سرور پر20,000 مرتبہ ای میل بھیج کر اسے بھاری کر دیتا ہے!

ان خواتین کی ہمت اور اپنے نبی مہربان صلی اللہ علیہ وسلم سے عشق کی کیفیت میرے دل کو ان کے حق میں دعا پرمجبور کر دیتی ہے جو چلچلاتی دھوپ اور جھلسا دینے والی گرم ہوائوں کی پروا نہ کرتے ہوئے اپنا احتجاج ریکارڈ کرواتی ہیں !

یہ سب لوگ فیس بک پر ملعون اور ذہنی طورپر پسماندہ لوگوں کے اس گھٹیا اور نیچ کام کے خلا ف احتجاج ریکارڈ کرواتے ہیں جو شائد کسی بھی مسلمان کو۔۔۔ جو واقعی دل و جان سے مسلمان ہے اور کسی فائدے کے چکر میں تھالی کے بینگن کی طرح ادھر سے ادھر لڑھکتا رہتا ہے۔۔۔ قبول نہیں۔ وہ نیچ اور گھٹیا کام 20 مئی کو ۔۔۔میرے منہ میں خاک۔۔۔ میرے آقا صلی اللہ علیہ وسلم کے شبیہات (Sketches) بنانے کا مقابلہ تھا جسے فیس بک کی انتظامیہ نے اپنے واضح قانون کہ کسی مذہبی اور نسلی نفرت پھیلانے والی ایکٹی ویٹی کی بالکل اجازت نہیں دی جائے گی کو خود ہی نظر انداز کر دیا بلکہ متعلقہ پیج ختم یا ڈیلیٹ کرنے کی مقرر ہ تعداد پوری ہونے کے باوجوداس غلا ظت کوکو ختم نہیں کیا۔

لیکن اس تمام صورتحال میں میرا کردار کیا رہا؟ جب میں یہ سوچتا ہوں تو میرا سر شرم سے جھک جاتا ہے۔

میں نے فیس بک کا بائیکاٹ کر دیا۔۔۔لیکن صرف تین دن کے لئے۔۔۔۔اور اب اس انتظار ہوںکہ کب یہ کھولے اور کب میں اپنے اکائونٹ پر موجود ڈیٹا بیس، ویڈیوز، لنکس سے استفادہ کر سکوں اور اپنے دوستوں اور ساتھیوں سے چیٹ(Chat) کر سکوں۔
"بس میں نے اپنا کردار ادا کر دیا ہے ، اب جیسے ہی فیس بک دوبارہ کھولےگا تو ہمیں اس کو استعمال کرنا چاہیے۔۔۔اس کو چھوڑ دینا تو میرے خیال میں صحیح نہیں ہو گا۔ میں اپنے دو ہزار ، پانچ ہزار کنکشن کو کیسے کھو دوں”

یہ خیالات مسلسل میرے ذہن پر یلغار کیے ہوئے ہیں ۔ پھر میں سوچتا ہوں کہ اس تین دن کے بائیکاٹ، فیس بک ہیک کرنے کی کوشش، سوفٹ وئیر کی مدد سے اس کے سرور کو متاثر کرنا اور سڑکوں پر کھڑے ہو کر احتجاج کا فائدہ کیا ہوا؟
یہ تمام چیزیں بہت اہم ہیں۔۔۔اس سے ہم نے اپنے رسول صلی اللہ علیہ وسلم سے اپنے تعلق کا اظہار کیا اور فیس بک کو ، جیسا کہ کچھ اعداد و شمار گردش میں ہیں، ان تین دنوں کے بائیکاٹ کے ذریعے 2 بلین یورو کا نقصا ن پہنچا یا۔ یقینا اس کا اثر بھی زبرد ست ہو ا۔
لیکن آگے کیا؟
لیکن صرف احتجاج کرنے ، ردعمل ظاہر کرنےاور کچھ عارضی تراکیب اختیار کرنے کا اثر بھی کیا عارضی نہیں ہو گا؟
فیس بک کو 2 ارب یورو کا نقصان شائد ایسا ہی ہے جیسے ایک بہت بھرے ہوئے جگ میں سےچند قطرے نکال لئے جائیں۔۔۔وہ اپنا یہ نقصان اگلے کچھ دنوں میں پورا کر لیں گے بلکہ کوئی بھی مارکیٹنگ مہم چلا کر اس سے دگنا منافع ہماری جیبوں سے نکلوا لیں گے۔
پھر کیا کیا جائے؟
ایک تو یہ مستقل طور پر فیس بک بائیکاٹ کیا جائے۔۔۔وہ یہ کچھ مشکل کام ہے۔۔۔ٹھیک ہے پھر آ پ کو مزید کچھ کرنے کی ضرورت نہیں۔۔۔پھر اپنے دل کو سمجھا بجھا کر پھر سے فیس بک سے دل بہلانے میں مصروف ہوجائیں۔
دوسرا یہ حل ہے کہ اس کے متبادل ایک سوشل نیٹ ورکنگ ویب سائٹ کھڑی کی جائے، جو ان لوگو ں کو جن کے لئے اس طرح کے نیٹ ورک کو چھوڑنا مسئلہ ہے ایک متبادل راستہ پیش کرے ۔ اس کےبعد ایک مہم چلا کر ان تمام لوگوں کوجنہوں نے اپنے عشق رسول صلی اللہ علیہ وصلم کا ثبوت دیتے ہوئے عارضی بائیکاٹ کیا تھا کو اس نئی سوشل نیٹ ورکنگ کی طرف لایا جائے۔ اس کے لئے کیا کیا جائے؟
اب ضرورت ہمیں کچھ ایسے کمپیوٹر اور انٹرنیٹ کے ماہرین کی ہے جو نہ صرف یہ کہ اس طرح کی ویب سائٹ قائم کرنے اور چلانے کی صلاحیت رکھتے ہوں بلکہ کچھ ایسے مخیر اور اہل دل حضرات درکار ہیں جو اس کے لئے ضروری مالی معاونت فراہم کر سکیں ۔ یہ تمام کا م صرف کیا نہ جائے بلکہ اس کو مستقل طور پر چلانے کے لئے نظام بھی قائم کیا جائے۔
احتجاج بھی ضرور ی ہے ۔۔۔لیکن۔۔۔ہمیں لوگوں کو متبادل پیش کرکے بھی اس طرف مائل کرنا ہے کہ جوشخص یا گروپ ہماری محبوب ترین شخصیت کے بارے میں کوئی ہلکا سا بھی میل اپنے دل میں رکھتا ہے اس کی بنائی اور چلائی جانے والی کوئی چیزہمارے لئے قابل قبول نہیں۔۔۔تو ہے کوئی جو اس بھاری پتھر کو اٹھا ئے اوراس شخصیت سے اپنے خلوص اور محبت کا اظہار کرے جسے کے بارے میں رب تعالی نے فرما دیا ہے کہ ” ہم نے تمہارے لئے تمہارے ذکر کا آوازہ بلند کر دیا ہے”

Advertisements

2 responses to this post.

  1. Posted by tazeen on 22/05/2010 at 1:19 صبح

    Well written!!!!

    جواب دیجیے

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s

%d bloggers like this: