افغانستان اور امریکہ۔۔۔۔۔۔۔اب بھی کچھ باقی ہے۔۔۔؟؟؟

معروف جریدے ٹائم نے اپنی حالیہ اشاعت میں سرورق پر ایک نوجوان لڑکی کی تصویر دی ہے جس کی ناک کٹی ہوئی دکھائی گئی ہے ۔اس تصویر کے ساتھ موجود کوراسٹوری کی سرخی میں یہ جملہ درج ہے

What Happens If We Leave Afghanistan

گویا ٹائم ،امریکی حکومت کی زبان بولتے ہوئے یہ کہنا چاہتا ہے کہ اگر امریکی اور ان کی قیادت میں موجود چالیس ممالک کی فوج وہاں سے چلی گئی تو ایس اہی دوبارہ ہو گا۔

Title of Time Magazine

کور اسٹوری کے مندرجات بھی انہی خیالات کی ترجمانی کرتے ہیں۔یقینا  پیشہ وارانہ لحاظ سے ایسی تصویر دینا جو موضوع کی صحیح صحیح ترجمانی کرے لائق تحسین اقدام ہے،مگر اس وقت تک جب یہ اپنی رائے دوسروں پر مسلط کرنے کے بجائے سچ کے اظہار کا سبب بنے۔

حقیقت یہ ہے کہ امریکی سربراہی میں گزشتہ دس برسوں سے افغانستان میں موجود افواج نے جس بڑے پیمانے پر شہری ودیہی آبادی کا قتل عام کیا ہے اس نے ہلاکو اور چنگیز خان کی روحوں تک کو شرما دیا ہے۔یودیوں نے ہٹلر سے جتنا ظلم منسوب کر رکھا ہے وہ بھی مات کھا گیا ہو گا۔جولائی کے مہینے میں66سے زائد امریکی فوجیوں کی افغانستان میں ہلاکت اس بات کی نشاندہی ہے کہ تمام تر جاہ و جلال ،قوت کے استعمال،تشددمدھوکہ دہی کے باوجود اگر ردعمل اتنا شدید ہے  تو اس کے پس پردہ کوئی عمل تو کارفرما ہو گا۔

ان حقائق کے تناظر میں جریدہ ٹائم کے تخلیق کاروں سے تھوڑی سی معذرت کے ساتھ ، تصویر کے ساتھ اصل کیپشن یوں ہونا چاہئے

What Still Happened Despite 10 Years of Occupying Afghanistan

اس تبدیل شدہ کیپشن کے ساتھ یہ تصویر منظر کی کچھ صحیح عکاسی کرتی محسوس ہوتی ہے۔ملاحظہ فرمائیں

Advertisements

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s

%d bloggers like this: